بچوں میں مذاق کرنے کی عادت ان کی ذہنی صلاحیتوں کی عکاسی کرتی ہے

عروبہ خانویب ایڈیٹر

14th Oct, 2021. 01:55 pm

چھوٹی عمر میں بچوں کو جو بھی چیز سکھائی جائے وہ انہیں زندگی بھر یاد رہتی ہے جبکہ بڑی عمر میں سیکھی جانے والی چیز اکثر بھلادی جاتی ہے۔

اسی لئے کہا یہ جاتا ہے کہ  بچوں کی 80 فیصد پرورش ان کی ابتدائی عمر کی ہی ہوتی ہے ۔

اس حوالے سے ایک تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ بچوں میں مذاق کرنے کی عادت ان کی ذہنی صلاحیتوں کی عکاسی کرتی ہے۔

اس ضمن میں 200 بچوں میں سے ہر ایک کو دس کارڈ دیئے گئے جن میں کارٹون بنائے گئے تھے۔ تمام بچوں سے کہا گیا کہ وہ اسے دیکھتے ہوئے کوئی مضحکہ خیز جملہ یا عنوان لکھیں۔

اس کے بعد سات مختلف ماہرین نے ان جملوں کی درجہ بندی کرتے ہوئے تحریر شدہ موضوع کو اول، دوم ، سوم اور دیگر درجات دیئے۔

اس کے بعد تمام بچوں کے معیاری آئی کیو ٹیسٹ بھی لیے گئے۔ جب بچوں میں ذہانت اور حسِ مزاح کا جائزہ لیا گیا تو پتا چلا کہ جن بچوں کی حسِ مزاح بلند تھی ان میں ذہانت کا معیار بھی اونچا تھا۔

اس حوالے سے ماہرین کا کہنا ہے کہ حسِ مزاح سے بچے بڑوں کو مرعوب کرنے کی کوشش کرتے ہیں لیکن اب معلوم ہوا ہے کہ اس کا ذہانت سے گہرا تعلق بھی ہے۔

Square Adsence 300X250