پاکستان کی برآمدات میں اضافہ


عروبہ خانویب ایڈیٹر

19th August, 2020
Export policy 2020 ristricted for the stuff upon 5000 Dollar

ادارہ شماریات نے گزشتہ ماہ کی ملک سے ہونے والی برآمدات سے متعلق رپورٹ جاری کر دی گئی ہے جس کے مطابق ماہ جولائی میں پاکستان کی برآمدات میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

ادارہ شماریات نے گذشتہ ماہ کی تفصیلی رپورٹ جاری کرتے ہوئے بتایا ہے کہ گزشتہ ماہ پاکستان کی برآمدات میں 6.10 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

گزشتہ ماہ  پاکستان سے تمباکو 137 فیصد۔ جبکہ مصالحہ جات 45 فیصد  برآمد کیئے گئے جبکہ رپورٹ کے مطابق قیمتی پتھر 123 فیصد جبکہ فرنیچر کی برآمد تقریبا 100 فیصد بڑھی ہے۔

حکومت کے 2 سال مکمل، بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا، مشیر خزانہ

ترپال ٹینٹ میں  155 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے جبکہ ٹیکسٹائل کی ایکسپورٹ میں 14.40 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

اس دوران چمڑے کی مصنوعات کی برآمد 74 فیصد  اضافہ رہکارڈ کیا گیا  جبکہ فارماسیوٹیکل مصنوعات کی برآمدات میں 20 فیصد اضافہ ہوا  ہے۔

جولائی میں مچھلی 54 فیصد اور گوشت کی پیداوار 16 فیصد بڑھ گئی ہے اور کارپٹ میں  4 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہےجبکہ  کھیلوں کے سامان کی ایکسپورٹ میں 6.44 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

یاد رہے کہ اس سے قبل پی ٹی آئی حکومت کی دو سالہ کارکردگی رپورٹ پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے مشیر خزانہ نے کہا کہ ہم نے قرض لے کر خود کو بہت کمزور کرلیا تھا، دوست ممالک نے آگے بڑھ کر ہماری مدد کی۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت نے 5 ہزار ارب روپے ماضی میں لیا گیا قرض ادا کیا، فیصلہ کیا تھا آزاد بنیاد پر پاکستان کو آگے لے کر جانا ہے، 20 ارب ڈالر خسارہ کو کم کر کے 3 ارب کر دیا گیا۔

مشیر خزانہ نے کہا کہ حکومت نے برآمدات بڑھانے کیلئے مراعات دیں، رواں سال اسٹیٹ بینک سے کوئی قرض نہیں لیا، ٹیکسز کے نظام کو بہتر کرنےکی کوشش کی، ملکی تاریخ میں پہلی بار حکومت نے اخراجات میں کمی کی، صدر اور وزیراعظم ہاؤس کے فنڈز کم کیے گئے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے کسی ادارے، کسی وزارت کو سپلیمنٹری گرانٹ نہیں دی۔