پاکستانی اسکواڈ کےکورونا ٹیسٹ دوبارہ کرانےکا فیصلہ


شبین رضاویب ایڈیٹر

26th November, 2020
Square ad 300 x 250

قومی اسکواڈ کے 6افراد میں کورونا کی تشخیص ہونے کے بعد نیوزی لینڈ حکام نے پورے اسکواڈ کے نمونے دوبارہ ٹیسٹ کیلئے بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے۔

پی سی بی ذرائع کے مطابق جمعہ کو تمام اسکواڈ کے کورونا ٹیسٹ کے لیے سیمپل لیے جائیں گے، ٹیسٹ نتیجہ منفی آنے پرقومی اسکواڈ کا 14 روزہ قرنطینہ شروع ہو گا۔

اسکواڈ کے قرنطینہ کے دوران بھی دو بارکورونا ٹیسٹ ہوگا۔

سی ای او پی سی بی وسیم خان نے نیوزی لینڈ میں موجود قومی اسکواڈ سے رابطہ کرکے تمام فراد کو پروٹوکولز پر عملدرآمد کی ہدایت کی ہے۔

وسیم خان نے کہا کہ نیوزی لینڈ میں قوانین سخت ہیں، قرنطینہ میں رہ کر سخت حالات برداشت کر لیں، ایس او پیز پر عملدرآمد ہوگا تو پھر ہی گھومنے پھرنے کی آزادی ملے گی۔

واضح رہےکہ نیوزی لینڈ کے دورے پر گئے پاکستانی اسکواڈ میں شامل 6 ارکان کا کورونا ٹیسٹ مثبت آ گیا۔

کرائسٹ چرچ میں موجود پاکستان کرکٹ ٹیم کے اسکواڈ  کے کورونا ٹیسٹ کل نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے کیے تھے۔

ذرائع کے مطابق ٹیسٹ مثبت آنے پر متاثرہ ارکان کو آئیسولیٹ کر دیا گیا ہےتاہم مثبت آنے والوں میں 6 میں سے 2 ارکان پہلے بھی کورونا کا شکار ہوچکے ہیں۔

نیوزی لینڈ کرکٹ کا اس بارے میں کہنا ہے کہ تمام چھ اراکین کو قرنطینہ میں بھیج دیا جائے گا، قرنطینہ میں اراکین مینجڈ آئسولیشن میں رہیں گے، تحقیقات مکمل ہونے تک ٹریننگ کی سہولت کو روک دیا گیا۔

کرکٹ نیوزی لینڈ کا مزید کہنا ہے کہ پاکستان اسکواڈ کے کچھ اراکین نے آئسولیشن کے پہلے دن ایس او پیز کی خلاف ورزی کی، اس معاملےپر پاکستانی ٹیم کے ساتھ بات چیت جاری ہے۔

لاہور سے روانگی کے وقت دورے کرنیوالے تمام اسکواڈ کے کورونا وائرس ٹیسٹ منفی آئے تھے۔

ذرائع کے مطابق  فخر زمان کو بخار کی علامات ظاہر ہونے پر اسکواڈ سے باہر کر دیا گیا تھا تاہم بعد میں ان کا کورونا ٹیسٹ منفی آیا تھا، پی سی بی کی جانب سے اجازت ملنے پر فخر زمان اپنے آبائی علاقے مردان روانہ ہو گئے تھے۔

واضح رہے کہ قومی کرکٹ ٹیم ان دنوں دورہ نیوزی لینڈ پر موجود ہے جہاں پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان 3 ٹی ٹوئنٹی اور 2 ٹیسٹ میچز کھیلے جائیں گے۔

پہلا ٹی ٹونٹی میچ 18 دسمبر کو آکلینڈ اور دوسرا 20 دسمبرکو ہیملٹن میں کھیلا جائے گا جب کہ سیریز کا تیسر ا میچ میچ 22 دسمبر کو نیپیئر میں ہوگا۔