ضرورت پڑی تو تعلیمی ادارے بند کرینگے، سعید غنی


ثمرا مظہرویب ایڈیٹر

24th November, 2020
سعید غنی
Square ad 300 x 250

وزیرِ تعلیم سندھ سعید غنی کا کہناہےکہ اگر ضرورت پڑی تو صوبے کے تعلیمی ادارے بند کرنے کا فیصلہ کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ہر صوبے کے حالات مختلف ہیں ، کوئی مشکل پیش آئی تو اسکول بند کرنے کے بارے میں فیصلہ کرسکتے ہیں۔

وزیرِ تعلیم سندھ سعید غنی کا یہ بھی کہنا ہے کہ سندھ حکومت وفاق سےضد کا تاثر نہیں دینا چاہتتی، تعلیمی ادارے کھلے یا بند رکھنے کے حوالے سےجو بھی فیصلہ ہوا، وہ نیک نیتی سے کریں گے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وفاقی وزیرشفقت محمود کی زیرصدارت بین الصوبائی وزرائے تعلیم اجلاس میں 26 نومبر سے 24 دسمبر تک تعلیمی ادارے بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

کورونا کے باعث اسکولوں کی بندش پر وزرائے تعلیم متفق ہیں ، 25 دسمبر سے 10 جنوری تک موسم سرما کی تعطیلات ہوں گی ۔

شفقت محمود کا کہنا ہے کہ ایک ماہ اسکولوں کی بندش وفاقی حکومت نے دی، اساتذہ اور بچوں کی صحت سب سے پہلے ہے، صحت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرسکتے۔

ذرائع کے مطابق بین الصوبائی وزرائے تعلیم کے اجلاس میں 26 نومبر سے 24 دسمبر تک تعلیمی ادارے بند رکھنے کی تجویز سامنے آئی۔

تمام صوبائی وزرائے تعلیم اس تجویز پر بھی متفق ہوئے ہیں کہ اس سال امتحانات کے بنا کسی بچے کو پروموٹ نہیں کیا جائے گا، بچوں کو پروموشن کے لئے امتحان دینا ضروری ہوگا۔

اجلاس  میں موسم سرما کی تعطیلات سے متعلق مشاورت کی گئی۔