Double Click 970 x 250

سری لنکن حکومت نے برقعے اور حجاب پر پابندی سے متعلق وضاحت کردی


اریبہ نثارویب ایڈیٹر

16th March, 2021
Adsense 300×600
Double Click 300 x 250

 برقعے اور حجاب پر پابندی کے حوالے سے سری لنکن حکومت کا بیان سامنے آگیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سری لنکن حکومتنے کہا کہ برقعے اور حجاب پر پابندی’محض تجویز‘ تھی جس کی تاحال منظوری نہیں دی گئی ہے۔

 تین روز قبل سری لنکا کے وزیر برائے عوامی تحفظ سارتھ ویراسکیرا نے برقع پہننے کو شدت پسندی قرار دیا تھا۔

انہوں نے کہا تھا کہ ملک بھر میں نقاب پہننے پر پابندی عائد کرنے کی دستاویز پر دستخط کردیے گئے ہیں جسے کابینہ سے منظور کرایا جائے گا۔

واضح رہے کہ سری لنکا میں برقع پہننے پر پابندی عائد کرنے کا منصوبہ بنا لیا گیا اور ایک ہزار سے زائد مدارس بھی بند کرنے کا اعلان کیا تھا۔

سری لنکا کے وزیر پبلک سیکیورٹی کا نیوز کانفرنس میں کہنا تھا کہ برقع مذہب انتہا پسندی کی علامت ۔

سری لنکا کے وزیر کا کہنا تھاکہ پہلے ملک میں کم ہی خواتین برقع پہنتی تھی اب اس رجحان میں خطرناک حد تک اضافہ ہوا ہے جو اس بات کی نشانی ہے کہ ملک میں انتہاپسندی بڑھ رہی ہے جس سے قومی سلامتی کو خطرہ ہے۔

وزیر پبلک سیکیورٹی نے بیان میں بتایا تھا کہ ملک میں مدارس بند کرنے کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے۔

 وزیر سارتھ ویراسکیرا کا مزید کہنا تھا کہ قومی تعلیمی پالیسی کی خلاف ورزی کرنے والے ہزار سے زائد اسلامی اسکولوں پر بھی پابندی کا فیصلہ کیا ہے۔

سری لنکا کے وزیر پبلک سیکیورٹی نے بتایا تھا کہ اب کوئی اپنا اسکول نہیں کھول سکے گا۔

Double Click 970 x 90