کورونا سے صحتیابی کے بعد کن نئی بیماریوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے؟

شبین رضاویب ایڈیٹر

16th Jun, 2021. 02:39 pm
کورونا

عالمی وباء کورونا وائرس سے صحتیاب ہونے والے افراد کو اعصاب اور مسلز کی تکلیف، سانس لینے میں دشواری، کولیسٹرول کی شرح میں اضافہ، شدید ترین تھکاوٹ اور ہائی بلڈ پریشر کی بیماریوں کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے۔

یہ بات امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق کے ابتدائی نتائج میں سامنے آئی ہے۔

تحقیق کے دوران ماہرین نے بتایا کہ کووڈ سے متاثر افراد کو صحتیابی کے بعد بھی مختلف علامات اور بیماریوں کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے۔

 

لاکھوں امریکی شہریوں کو کورونا  کو شکست دینے کے بعد مختلف طبی مسائل کے باعث ڈاکٹرزسے رجوع کرنا پڑا، حالانکہ کورونا وائرس سے قبل ان کو ان بیماریوں کا سامنا نہیں تھا۔

کورونا وائرس کو شکست دینے والے افراد میں کووڈ کی طویل المعیاد علامات کے بارے میں دنیا بھر میں تیزی سے تحقیقی کام کیا جارہا ہے۔

اس حوالے سے کی گئی  تحقیق کے مطابق  امریکا میں لگ بھگ ایسے 20 لاکھ افراد کے ہیلتھ انشورنس ریکارڈز کی جانچ پڑتال کی گئی تھی جن میں گزشتہ سال کووڈ کی تشخیص ہوئی تھی۔

تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ بیماری کے ایک ماہ یا اس سے زائد عرصے بعد 23 فیصد افراد کو نئی بیماریوں کے لیے علاج کرانا پڑا۔

تحقیق کے مطابق  بیماری کو شکست دینے کے بعد مسائل کا سامنا کرنے والے لگ بھگ 50 فیصد افراد کو کووڈ کے باعث ہسپتال میں داخل ہونا پڑا تھا، مگر 27 فیصد افراد ایسے تھے جن میں بیماری کی شدت معمولی یا معتدل تھی، جبکہ 19 فیصد ایسے تھے جن میں علامات بھی ظاہر نہیں ہوئی تھیں۔

اس تحقیق کے نتائج کو کسی طبی جریدے میں شائع نہیں کیا گیا بلکہ ایک ویب سائٹ پر جاری کیے گئے۔

 

 

 

 

Adsense 300×250