اپوزیشن کی تمام جماعتوں کو الیکشن کمیشن کے ساتھ کھڑا ہونا چاہیے، مصطفی نواز

وریشہ مسعودویب ایڈیٹر

19th Sep, 2021. 05:25 pm
مصطفی نواز

پاکستان پیپلزپارٹی کے سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے کہا ہے کہ اپوزیشن کی تمام جماعتوں، وکلا، صحافیوں اور دیگر طبقات کو الیکشن کمیشن کے ساتھ کھڑا ہونا چاہیے ۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلزپارٹی کے سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ الیکشن کمیشن کے نوٹسز کے بعد  وفاقی وزرا ء آپے سے باہر ہو گئے ہیں، پہلے الیکشن کمیشن کو آگ لگانے کی دھمکی دی اب متنازعہ بنانے کی مہم چلائی جا رہی ہے۔

مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ حکومت آئندہ عام انتخابات میں دھاندلی کیلئے الیکشن کمیشن کی ساکھ خراب کر رہی ہے، الیکٹرانک ووٹنگ مشین کا منصوبہ اصل میں آئندہ عام انتخابات چوری کرنے کی سازش ہے۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے سینیٹر کا کہنا تھا کہ جب الیکشن کمیشن نے ای وی ایم پر تحفظات کا اظہار کیا تو اسے بدنام کیا جا رہا ہے۔ اپوزیشن کی تمام جماعتوں، وکلا، صحافیوں اور دیگر طبقات کو الیکشن کمیشن کے ساتھ کھڑا ہونا چاہیے۔

مصطفی نواز کھوکھر کا یہ بھی کہنا تھا کہ چیف الیکشن کمشنر نے ڈسکہ کے انتخابات میں حکومت کا دباؤ قبول کرنے سے انکار کیا تھا جبکہ ڈسکہ میں دھاندلی کا نوٹس لے کر پولیس اور انتظامیہ کے افسروں کو معطل کیا گیا۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر کا مزید کہنا تھا کہ چیف الیکشن کمشنر کمیشن کی ساکھ بحال کرنی کوشش کر رہے ہیں، حکومت چیف الیکشن کمشنر کو سنگل آؤٹ کر کے ان پر الزامات کی بوچھاڑ کر رہی ہے۔

واضح رہے اس سے قبل  پاکستان پیپلزپارٹی کے سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے سینیٹ کی پارلیمانی امور کمیٹی کے اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے کہا  تھا کہ عمران خان کی حکومت نے اختلاف رائے رکھنے والوں پر گھٹیا الزام لگانے کا گھناؤنا وطیرہ اختیار کر رکھا ہے۔

مصطفی نواز کھوکھر نے کہا تھا کہ ای وی ایم پر الیکشن کمیشن کے جائز اعتراضات کو جواب نہیں تھا تو الزام لگا دیا، موجودہ چیف الیکشن کمشنر ای سی پی کی ساکھ بہتر کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے مزید کہا تھا کہ پارلیمانی کمیٹی میں لگائے گئے الزام کا حکومت کو ثبوت پیش کرنا ہوگا، حکومت ثبوت سامنے لائے یا پھر ای سی پی پارلیمانی کمیٹی اور قوم سے معافی مانگے۔

Adsence 300X250