چیئرمین نیب کا انتخاب وزیراعظم کی صوابدید ہے، وزیرقانون

شبین رضاویب ایڈیٹر

24th Sep, 2021. 01:38 pm
فروغ نسیم

وزیر قانون فروغ نسیم کا کہنا ہے کہ چیئرمین نیب کا انتخاب وزیراعظم کی صوابدید ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین نیب کی مدت ملازمت میں توسیع سےمتعلق وزیرقانون نے ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ چیئرمین نیب مدت میں توسیع سےمتعلق آرڈیننس کا مسودہ تیارنہیں، چیئرمین نیب مدت ملازمت کا معاملہ آئندہ ہفتے واضح ہوجائےگا۔

فروغ نسیم نے کہاکہ چیئرمین نیب کا انتخاب وزیراعظم کی صوابدید ہے، وزیراعظم کوچیئرمین نیب کے معاملے پرصرف مشورہ دے سکتا ہوں، وزیراعظم چیئرمین نیب کیلئے مزید ناموں پرغورکرینگے۔

وزیرقانون نے کہاکہ وزیراعطم جسے مناسب سمجھیں گےاسی کومنتخب کرینگے، وزیراعظم عمران خان آج یواین جنرل اسمبلی سے خطاب کریں گے، وزیراعظم سے آج اس معاملے پرمشاورت کرنا مناسب نہیں۔

واضح رہےکہ وزیراعظم عمران خان آج اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کریں گے۔

 وزیراعظم عمران خان نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 76 ویں اجلاس سے ورچوئل خطاب کرینگے۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان کا خطاب ریکارڈ کیا جاچکا ہے، جوکہ تقریباً آدھے گھنٹے کا ہوگا۔

اپنے اس اہم خطاب میں وزیراعظم افغانستان اور مسئلہ کشمیر پر بات کریں گے ، اس کے ساتھ ساتھ وزیراعظم افغانستان سے متعلق پاکستانی پالیسی بھی واضح کریں گے۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا معاملہ بھی اٹھائیں گے اورکورونا کے خلاف پاکستانی اقدامات سے بھی آگاہ کریں گے۔

دوسری جانب وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 76 ویں اجلاس کے موقع پر جاپان کے وزیر خارجہ مسٹر توشی مِٹسو موتیجی سے ملاقات ہوئی۔

ذرائع کے مطابق دونوں وزرائے خارجہ کے مابین دوطرفہ تعلقات ، افغانستان کی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے دیگر امور پر تبادلہ خیال ہوا۔

مخدوم شاہ محمود قریشی کا اس مو قع پر کہنا تھاکہ پاکستان جاپان کے ساتھ اپنے سیاسی اور معاشی تعلقات کو بہت اہمیت دیتا ہے۔ پاکستان جاپان کو ایک ترقیاتی حوالے سے قابل اعتماد شراکت دار سمجھتا ہے۔

وزیرخارجہ نے کہاکہ ہم 2022ء میں پاکستان اور جاپان کے سفارتی تعلقات کی 70 ویں سالگرہ کو پرجوش انداز میں منانے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

وزیر خارجہ نے پاک جاپان باہمی تعلقات کو مزید مستحکم بنانے اور باہمی دلچسپی کے شعبوں میں تعاون بڑھانے کے لیے مشترکہ کاوشیں بروئے کار لانے کی ضرورت پر زور دیا۔

وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے اپنے جاپانی ہم منصب کو افغانستان کی ابھرتی ہوئی صورتحال کے حوالے سے پاکستان کے نقطہ نظر سے آگاہ کیا۔

ان کا کہناتھا کہ افغانستان میں پائیدار امن اور استحکام کا قیام خطے کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل ہے، افغانستان میں نمو پاتے انسانی اور معاشی بحران کے خاتمے کے لیےضروری ہے کہ عالمی برادری افغانوں کی معاونت کو یقینی بنائے۔

وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے بھارت کی جانب سے مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری انسانی حقوق اور بین الاقوامی قوانین کی سنگین خلاف ورزیوں کے شواہد پر مشتمل ایک “ڈوزیر” جاپانی ہم منصب کو پیش کیا۔

دوسری جانب سکھوں کی تنظیم “ سکھ فار جسٹس “ نے ہندوستانی وزیراعظم مودی کے دورہ امریکہ پہ بڑے احتجاج کی کال دیتے ہوئے وائٹ ہاؤس سے لے کر اقوام متحدہ تک ان کا پیچھا کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔

سکھوں کی تنظیم سکھ فار جسٹس کے منتظمین کا اس حوالے سے کہنا ہےکہ مودی کے مظالم کے خلاف وائٹ ہاوس سے رابطے میں ہیں ،امریکی صدر جو بائیڈن اور نائب صدر کمالہ ہیریس کو اس حوالے سے خط لکھ دئیے گئے ہیں۔

سکھوں کی تنظیم سکھ فار جسٹس کے مطابق سینیٹرز اور کانگریس میں کوبھی اس حوالے سے اعتماد میں لے رہے ہیں ۔

صرف یہی نہیں بلکہ ہندوستانی وزیر اعظم کے خلاف ایک بار پھر امریکہ اور دیگر ممالک میں قتل اور پر تشدد کارروائیوں کے خلاف مقدمے درج کروانے کا اعلان کیا گیا ہے۔

Adsence 300X250