جمعیت علماء اسلام کا ملک میں مہنگائی و روزگاری کیخلاف احتجاج

Wajeeha baig

21st Oct, 2021. 12:34 pm

جمعیت علماء اسلام نے ملک میں بے انتہاء مہنگائی و بد آمنی و بے روزگاری کیخلاف احتجاج کیا۔

تفصیلات کے مطابق  بنوں کے علاقے پریٹی چوک میں کارکنوں نے موجودہ حکومت کیخلاف شدید احتجاج ریکارڈ کرتے ہوئے نعرے بازی کی جبکہ اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ ہم اضافی کچھ نہیں کہتے لیکن عمران خان کے کنٹینرز پر دیئے گئے بیانات دہرا رہے ہیں۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ ریاست مدینہ کے نام پر قوم سے کرسی اور وزارت عظمہ حاصل کیا جبکہ حجاج بن یوسف سے بھی زیادہ ظالمانہ حکمرانی کر رہے ہیں۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ مہنگائی کے باعث لوگ اپنے بچوں کو قتل کرکے زندگی کا خاتمہ کرنے لگے ہیں۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت نے ایک سال میں 300 ارب ڈالر کا  قرضہ لیا۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ مہنگائی و ٹیکسز اس قدر بڑھائے گئے کہ اب صاحب استعداد طبقہ بھی سقط نہیں رکھتے۔

مظاہرین کا مطالبہ کرتے ہوئے مزید کہنا تھا کہ ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی ، فحاشی و لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ کیا جائے۔

Square Adsence 300X250