سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کا طلحہ طالب اور ارشد ندیم کو زبردست خراج تحسین

زاہد فاروق ملک رپورٹر

07th Oct, 2021. 11:25 pm

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی بین الصوبائی رابطہ نے  ایتھلیٹ طلحہ طالب اور ارشد ندیم کو زبردست خراج تحسین پیش کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق  سینیٹ کی قائمہ کمیٹی بین الصوبائی رابطہ کا اجلاس سینیٹر رضاء ربانی کی زیر صدارت ہوا جس میں چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ رمیز راجہ بھی شریک ہوئے ،اجلاس میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے معاملات پر بریفنگ دی گئی ، اجلاس میں اولمپئین طلحہ طالب اور ارشد ندیم  بھی شریک ہوئے۔

 اس موقع پر سینیٹرز کی جانب سے طلحہ طالب اور ارشد ندیم کو خراج تحسین پیش کیا۔

 اراکین کمیٹی نے کہاکہ ارشد ندیم اور طلحہ طالب کی کارکرگی کو سراہتے ہیں، قوم ارشد ندیم اور طلحہ طالب کی طرف دیکھ رہی تھی۔

 انہوں نے کہاکہ آپ دونوں نے کامیابی کے لئے بڑی کوشش کی، آپ کی حوصلہ افزائی کو ضروری سمجھا۔

سینیٹر عرفان صدیقی نے کہاکہ یہ سوال بڑا پریشان کن ہے کہ ہر اچھے کام میں پاکستان پیچھے جا رہا ہے، سینیٹر مشتاق احمد نے کہاکہ اسپورٹس کو مکمل طور پر نظرانداز کیا جا رہا ہے، ریاست کو جس طرح توجہ دینی چاہئے اس طرح توجہ نہیں دی جا رہی۔

فہمیدہ مرزانے کہاکہ ان کھلاڑیوں کو سپورٹ چاہیے، ڈیپارٹمنٹ کو کہا ہے کہ میکنزم بنائیں کہ اگر کھلاڑیوں کو آگے بڑھانے کے لئے آپ کے پاس پیسے ہیں،ڈیپارٹمنٹ سے کسی کھلاڑی کی تنخواہیں بند کرنے کا نہیں کہا۔

 رضا ربانی نے کہاکہ پی آئی اے ایک سی ای او کے دس بارہ لاکھ برداشت کر سکتا ہے تو ایتھلیٹس کو کیوں نہیں؟

اجلا س کے دور ان ارشد ندیم نے کہاکہ ٹریننگ کے حوالے سے بتاؤں تو کافی مشکلات کا سامنا کیا ہے،فہمیدہ مرزا اور پی سی بی کا شکریہ ادا کروں گا ،جنہوں نے سہولیات فراہم کی ،ہر کھلاڑی کی یہی کوشش ہوتی ہے کہ پہلے نوکری ڈھونڈوں۔

 ان کا کہنا تھا کہ  2015 میں واپڈا کی نوکری لی، اس کے بعد اسپورٹس شروع کیا،اداروں سے اگر سپورٹس ختم کی گئی تو ملک سے اسپورٹس ہی ختم ہوجائے گا۔

طلحہ طالب نے کہاکہ اداروں سے اسپورٹس کیلئے سپورٹ ختم کی جا رہی ہے جس کا نوٹیفکیشن جاری ہوگیا ہے،اداروں کی سپورٹس ختم نہ کی جائے۔

اجلاس کے دور ان کمیٹی میں ارشد ندیم اور طلحہ طالب کو اعزازی شیلڈز دی گئی تھیں۔

Square Adsence 300X250