Advertisement
Advertisement
Advertisement
Advertisement

بھارتی انتہا پسندوں نے مسلمان کامیڈین کے 12 شوز منسوخ کروادیے

Now Reading:

بھارتی انتہا پسندوں نے مسلمان کامیڈین کے 12 شوز منسوخ کروادیے

بھارتی انتہا پسندوں نے معروف کامیڈین منور فاروقی پر روزگار کے دروازے بند کر دیے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق دو ماہ کے دوران دھمکیاں دے کر منور فاروقی کے 12 شوز منسوخ کروادیے۔

بینگلورو میں ان کے شو سے پہلے بھارتی پولیس نے بھی ہاتھ جوڑ لیے اور منتظمین سے کہا کہ شو نہ کریں۔

کامیڈین منور فاروقی نے سوشل میڈیا پر لکھا کہ نفرت جیت گئی اور آرٹسٹ ہار گیا۔

رپورٹ کے مطابق پولیس نے امن و امان اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی خلاف ورزی کے خدشے کے باعث منور فاروقی کا شو منسوخ کیا ہے۔

اس حوالے سے پولیس افسر نے کہا کہ منتظمین کو زبانی اور تحریری طور پر اس بارے میں آگاہ کر دیا گیا ہے۔

ایک بیان میں کہا گیا کہ ہم قانون کی پاسداری کرنے والے شہری ہیں اور پولیس کے نوٹس پر عمل کریں گے۔

Advertisement

ساتھ ہی منور فاروقی نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ سے اس حوالے سے ایک پوسٹ کیا۔

انہوں نے اپنی پوسٹ میں بتایا کہ آج کا بنگلور شو منسوخ کر دیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس شو کے لیے 600 سے زیاہ ٹکٹ فروخت کیے گئے تھے۔

انہوں نے پرشکوہ انداز میں یہ بھی لکھا کہ ’مجھے اس مذاق کے لیے جیل میں ڈالنا جو میں نے کیا ہی نہیں تھا اور وہ شو منسوخ کرنا جس میں کوئی مسئلہ نہیں، نا انصافی ہے۔‘

منور فاروقی نے یہ بھی لکھا کہ گذشتہ دو ماہ میں جگہ اور مداحوں کو درپیش خطرے کی وجہ سے 12 شو کینسل کیے گئے۔

اپنی ٹویٹ میں انہوں نے مزید لکھا ان کی نفرت کا بہانہ بن گیا ہوں، ہنسا کر کتنوں کا سہارا بن گیا ہوں، ٹوٹنے پر ان کی خواہش پوری ہو گی۔ صحیح کہتے ہیں میں ستارہ بن گیا ہوں۔

Advertisement

اپنی پوسٹ کے اختتم میں لکھا کہ میرا خیال ہے یہ اختتام ہے، میرا نام منور فاروقی ہے۔ وہ میرا وقت تھا اور آپ دیکھنے والے زبردست تھے۔ خدا حافظ! اب میری بس ہو چکی ہے۔

یاد رہے کہ گجرات سے تعلق رکھنے والے منور فاروقی کو اندور پولیس نے اس سال کے شروع میں گرفتار کیا تھا جس کے بعد وہ ایک ماہ سے زیادہ جیل میں رہے۔

کامیڈین منور فاروقی کو اندور پولیس نے یکم جنوری کو گرفتار کیا تھا ان کے علاوہ چار دیگر افراد کو گرفتار کیا گیا۔

 ان پر ہندو دیوی دیوتاؤں اور وزیر داخلہ امیت شاہ پر نازیبا تبصرہ کرنے کا الزام تھا۔

منور فاروقی کے خلاف اتر پردیش میں بھی مقدمہ درج ہے۔ 19 اپریل 2020 کو پیشے کے اعتبار سے وکیل اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کے کارکن آشوتوش مشرا نے منور فاروقی کے خلاف مقدمہ دائر کیا تھا۔

اس میں ان پر مذہبی جذبات بھڑکانے کا الزام لگایا گیا تھا۔

Advertisement

 ان پر سوشل میڈیا پر اپنی ایک ویڈیو میں ہندو دیوتاؤں اور گودھرا ٹرین سانحے کے متاثرین کا مذاق اڑانے کا الزام تھا۔

منور فاروقی کون ہیں؟

منور فاروقی ایک خوش مزاج مسکراتے شخص معلوم ہوتے ہیں اور ابھی ان کی اپنی شخصیت میں بھی مزید نکھار آ رہا ہے۔

وہ جدید انڈیا کی حقیقتوں میں اپنے لطیفے ڈھونڈتے ہیں اور اکثر تلخ زبان استعمال کرتے ہیں۔ وہ تمام مذاہب کا مذاق اڑاتے ہیں۔

یوٹیوب پر ان کے پانچ لاکھ سے زیادہ فالور ہیں اور انسٹاگرام پر وہ تیزی سے مقبول ہو رہے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ انڈیا میں ہر سماجی روابط کی ویب سائٹ ایک ڈیٹنگ پلیٹ فارم بن جاتا ہے۔

Advertisement

واضح رہے کہ شو کے منتظمین کو دیے گئے نوٹس میں پولیس کی جانب سے کہا گیا ہے کہ منور فاروقی ایک متنازع شخص ہیں۔ وہ دوسرے مذاہب کے دیوتاؤں کے بارے میں متنازع بیانات دیتے ہیں۔

Advertisement
Advertisement
مزید پڑھیں

Catch all the Business News, Breaking News Event and Latest News Updates on The BOL News


Download The BOL News App to get the Daily News Update & Live News


Advertisement
آرٹیکل کا اختتام
مزید پڑھیں
معروف اداکارہ کینسر کے باعث انتقال کرگئیں
مکیش امبانی کے بیٹے کی شادی میں گھسنے کی کوشش پر 2 افراد گرفتار
اپنی پہلی فلم کی شوٹنگ کے دوران اپنا نام تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا تھا، اکشے کمار
اداکار منظور قریشی نے شوبز کو خیرباد کہہ دیا
جان سینا اور شاہ رخ خان کی ملاقات؛ تصاویر وائرل
معروف پاکستانی اداکار انتقال کرگئے
Advertisement
توجہ کا مرکز میں پاکستان سے مقبول انٹرٹینمنٹ
Advertisement

اگلی خبر