Advertisement
Advertisement
Advertisement
Advertisement

بہ حیثیت اپوزیشن لیڈرمیرااورچئیرمین تحریک انصاف کا راستہ روکا گیا، عمرایوب

Now Reading:

بہ حیثیت اپوزیشن لیڈرمیرااورچئیرمین تحریک انصاف کا راستہ روکا گیا، عمرایوب
اپوزیشن لیڈر

بہ حیثیت اپوزیشن لیڈرمیرااورچئیرمین تحریک انصاف کا راستہ روکا گیا، عمرایوب

اپوزیشن لیڈرنے کہا ہے کہ بہ حیثیت اپوزیشن لیڈرمیرااورچئیرمین تحریک انصاف کا راستہ روکا گیا، ہماری فیملیز کو ہراساں کیا گیا۔

قومی اسمبلی قائدحزب اختلاف عمرایوب نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ انتہائی افسوس سے کہنا پڑتا ہے 21 اپریل کا بائی الیکشن ڈھونگ رچایا گیا، عوام کے ٹیکسوں کے پیسے کا ضیاع کیا گیا، موبائل سروسزاورانٹرنیٹ سروسز کو چوبیس گھنٹے پہلے معطل کردیا گیا۔

عمر ایوب نے کہا کہ فارم 47 والی حکومت شفافیت نہیں چاہتے، بونیرمیں ڈسٹرکٹ ریٹرننگ افسر نے تشدد کرنے والے افسراورادارے کو بھی خط میں لکھا، جو کل کا 21 اپریل کا الیکشن ہوا یہ ایک ڈھونگ رچایا گیا۔ دنیا الیکشن میں شفافیت چاہتی ہے یہاں اندھیرے میں کام کرنا چاہتے ہیں۔

اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ باجوڑمیں ڈی آر او نے خط لکھا، اسلام آباد ہائی کورٹ کے 6 جج صاحبان نے بھی لوگوں کی ہراسگی کے بارے میں لکھا۔ کل نجی چینلز کے نمائندوں کو پنجاب پولیس نے گجرات کے چوک سے اٹھایا۔  ڈی پی او گجرات، ریٹرننگ آفیسر اس معاملے کی نگرانی کر رہے تھے۔

عمرایوب نے کہا کہ بحیثیت اپوزیشن لیڈر میرا اور چئیرمین تحریک انصاف کا راستہ روکا گیا۔ کل ہم 3 گھنٹے وہاں موجود رہے ہمیں کہا گیا کہ ہمیں آرڈر ہے آپ کو آگے نہ جانے دیا جائے۔ ہماری فیملیز کو ہراساں کیا گیا۔ ان تمام افسران نے الیکشن میں کھلم کھلا دھاندلی کی،میڈیا کے لوگوں کو کوریج کرنے پر تشدد کا نشانہ بنایا۔

Advertisement

چیئرمین تحریک انصاف بیرسٹر گوہرنے اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی عمر ایوب، سنی اتحاد کونسل کے سربراہ صاحبزادہ حامد رضا کے ہمراہ پریس کانفرنس میں کہا کہ ہماری کوشش ہوتی ہے وہ چیز شیئر کریں جو ملک و قوم کیلئے بہتر ہو، لیکن بد قسمتی سے جب بھی آتے ہیں بد خیری ہی ملک میں چل رہی ہوتی ہے۔

بیرسٹرگوپرنے کہا کہ لوگ خوشی سے جا کر اپنے نمائندوں کا انتخاب کرتے ہیں، کل کا دن ملکی تاریخ کا سیاہ دن رہا۔ ووٹ ہی جمہوریت ہے جو پارلیمان کا ستون سمجھا جاتا ہے۔ ووٹ کا صحیح استعمال ہی اصلی نتائج دیتا ہے۔ ضمنی انتخاب میں میں جو کچھ ہوا سب نے دیکھا۔

انھوں نے کہا کہ کل میں ایک پولنگ اسٹیشن پر گیا تو پریزائیڈنگ افسر نے رجسٹرڈ سات سو پچاس ووٹ بتایا، لیکن اس پولنگ اسٹیشن میں نو سو زائد ووٹ کاسٹ کروایا گیا، الیکشن پراسس میں نہ صرف لیول پلیئنگ فیلڈ بلکہ لوگوں کو بھی آزادانہ انداز میں ووٹ کاسٹ کرنے دیں۔

بیرسٹرگوہر نے کہا کہ ووٹنگ کا وقت شروع ہونے سے پہلے سے کچھ ووٹ ڈالے جا چکے تھے۔ ہمارا الیکشن کمیشن سے مطالبہ ہے کہ کمشنر راولپنڈی کی انکوائری ہم سے شیئر کریں، کمشنرراولپنڈی کے بیان کے بعد وہ منظرعام سے غائب ہوئے، الیکشن کمیشن بائی الیکشن میں دھاندلی کی انکوائری کرے۔

انھوں نے کہا کہ ایک پولنگ اسٹیشن پر امیدوار کے والد نے کہا کہ ووٹ تو پہلے ہی ڈال چکا۔ الیکشن کمیشن نے اس سارے عمل میں کچھ بھی نہیں کیا۔ کمشنر راولپنڈی نے اعترافی بیان دیا اس کے بعد معاملہ دبا دیا گیا۔ کل پنجاب میں کھلی دھاندلی ہوئی ان کی کامیابی کا نوٹیفکیشن فوری روکا جائے۔

بیرسٹرگوہرنے کہا کہ اگر دھاندلی ہوئی ہے تو جیت کا نوٹیفکیشن کسی صورت نہیں ہونا چاہئے، الیکشن کمیشن نے ایسے کون سے اقدامات کیے کہ ایسے معاملات دوبارہ نہ ہوں، الیکشن کمیشن عوام کو بتائے کہ ضمنی الیکشن میں عدلیہ سے آر او کیوں نہ لیے گئے،  24 گھنٹے ہوگئے ہم نے الیکشن کمیشن کو سب آگاہ کیا ابھی تک کوئی اقدامات نہیں کیے گئے۔ اس گھناؤنے جرم میں پنجاب حکومت مستفید ہوتی رہی، پولنگ سٹیشنز سے ہمارے پولنگ ایجنٹس کو باہر نکال دیا گیا

Advertisement

Advertisement
Advertisement
مزید پڑھیں

Catch all the Business News, Breaking News Event and Latest News Updates on The BOL News


Download The BOL News App to get the Daily News Update & Live News


Advertisement
آرٹیکل کا اختتام
مزید پڑھیں
وزیراعظم کا رفح کی صورتحال پر اظہار تشویش
جہلم؛ سالٹ رینج کھیوڑہ کے پہاڑی جنگلات میں آگ لگ گئی
پاک بحریہ نےسمندرمیں منشیات اسمگلنگ کی بڑی کوشش ناکام بنادی
ثاقب نثار کا فیصلہ ردی کی ٹوکری میں ڈال دیا گیا، نواز شریف
اسپین کا فلسطین کو آزاد ریاست تسلیم کرنے کا خیرمقدم کرتے ہیں، وزیراعظم 
 اللہ نے دوبارہ نوازشریف کوعزت دی ہے، شہبازشریف 
Advertisement
توجہ کا مرکز میں پاکستان سے مقبول انٹرٹینمنٹ
Advertisement

اگلی خبر