Advertisement
Advertisement
Advertisement
Advertisement

سگریٹ پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کا نفاذ ناگزیر ہے، انسداد تمباکو تنظیمیں

Now Reading:

سگریٹ پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کا نفاذ ناگزیر ہے، انسداد تمباکو تنظیمیں

تمباکو کے خلاف کام کرنے والی تنظیموں اور کارکنوں کا کہنا ہے کہ آئندہ بجٹ میں سگریٹ پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کا نفاذ ناگزیر ہے۔

تمباکو کے خلاف کام کرنے والی تنظیموں اور کارکنوں نے حکومت کو خبردار کیا ہے کہ اگر آئندہ بجٹ میں حکومت نے فیڈرل ایکسائیز ڈیوٹی نہ بڑھائی تو حکومت ٹیکس اصلاحات سے حاصل ہونے والا ریونیو اور ٹیکس ریفارمز کے دیگر فوائد حاصل نہیں کر سکے گی۔

دی سوشل پالیسی اینڈ ڈویلپمنٹ سینٹر کی جانب سے جاری کردہ ایک تحقیق میں کہا گیا ہے کہ پاکستان میں 31.6 ملین بافراد تمباکو کا استعمال کرتے ہیں جس کے نتیجے میں سالانہ ایک لاکھ 6 ہزار سے زیادہ اموات ہوتی ہیں۔

تمباکو نوشی سے متعلق بیماریوں اور اموات کی وجہ سے پاکستان کی سالانہ جی ڈی پی کا کم از کم 1.4 فیصد خرچ ہوتا ہے۔ تحقیق کے مطابق وفاقی حکومت کی اصلاحات کی بدولت مالی سال 2022،23 میں تمباکو پر عائد فیڈرل ایکسائیز ڈیوٹی کی وجہ سے رواں مالی سال کے پہلے 5 مہینوں میں 122 بلین روپے تک محصولات ہوئیں ہے۔

مطالعہ میں کہا گیا ہے کہ ان اصلاحات نے نہ صرف آمدنی میں اضافہ کیا ہے بلکہ تمباکو کی کھپت کو کم کرکے اور پاکستان میں تمباکو نوشی سے منسلک صحت کی دیکھ بھال کے کل اخراجات کے 17.8 فیصد کی ممکنہ طور پر وصولی کے ذریعے صحت عامہ میں بھی اہم کردار ادا کیا ہے۔

Advertisement

تحقیق میں کہا گیا ہے کہ تماکو ٹیکس کی موجودہ شرح کو برقرار رکھنے کے نتیجے میں صحت کی بحالی میں 17.8% سے 15.6% تک کمی واقع ہو سکتی ہے اور 2023-24 میں صحت کی لاگت کی بحالی کی اسی سطح کو حاصل کرنے کے لیے آئندہ سال کے لیے فیڈرل ایکسائیز ڈیوٹی کی شرح میں 37% اضافے کی تجویز دی گئی ہے۔

تماکو نوشی کے خلاف کام کرنے والے ایکسٹیوسٹوں کا خیال ہے کہ ٹیکس میں اضافے سے غیر قانونی تجارت کو فروغ نہیں ملے گا، کیونکہ تحقیقی شواہد سے پتہ چلتا ہے کہ تمباکو کی فرمیں ٹیکس پالیسی پر اثر انداز ہونے اور ٹیکس سے بچنے کے لیے اپنی رپورٹ شدہ پیداوار میں ہیرا پھیری کرتی ہیں۔

حال ہی میں شروع کیے گئے ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم سے توقع ہے کہ وہ جعلسازی کوکم غیر قانونی تجارت کو روکنےاور فرنٹ لوڈنگ پر نظر رکھے گا۔

تحقیق میں کہا گیا کہ بجٹ آئندہ سال کے 2024-25 کے لیے ٹیکس کی مجوزہ شرحوں کا مقصد ریٹیل قیمت میں فیڈرل ایکسائیز ڈیوٹی کا حصہ 70% تک بڑھانا، اضافی ریونیو پیدا کرنا اور صحت عامہ کو فروغ دینا ہے۔

Advertisement
Advertisement
مزید پڑھیں

Catch all the Business News, Breaking News Event and Latest News Updates on The BOL News


Download The BOL News App to get the Daily News Update & Live News


Advertisement
آرٹیکل کا اختتام
مزید پڑھیں
بانی پی ٹی آئی سمیت سیاستدانوں پر مقدمات نہیں بننے چاہیں، مولانا فضل الرحمان
’’نظرِثانی کا حق آئین نےدیا، ججزکے آرام اورآسانی کو نہیں آئین کوترجیح دینی چاہئے‘‘
جو صحافت کی شکل میں سیاست کر رہے ہیں انکا ایجنڈا کوئی اور ہے، عظمیٰ بخاری
محکمہ موسمیات کی بارشوں کے حوالے سے بڑی پیشگوئی
پاسپورٹ بنوانے والوں کیلئے نئی مشکل کھڑی ہوگئی
شہرِ قائد کے لیے بجلی فی یونٹ 5 روپے 45 پیسے مہنگی ہونے کا امکان
Advertisement
توجہ کا مرکز میں پاکستان سے مقبول انٹرٹینمنٹ
Advertisement

اگلی خبر