Advertisement
Advertisement
Advertisement
Advertisement

جس نے پاکستان کو تباہ وبرباد کیا اس کا احتساب ہونا چاہیے، نواز شریف

Now Reading:

جس نے پاکستان کو تباہ وبرباد کیا اس کا احتساب ہونا چاہیے، نواز شریف

سابق وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ کسی ملک میں ججز وزیراعظم یاصدرکو نہیں نکال سکتے لیکن 3 لوگ بیٹھ کر25 کروڑعوام کے نمائندہ وزیراعظم کوتاحیات نااہل کررہے تھے، مجھے بتائیں اس کا جواب کون دے گا۔ 

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف نے سینٹرورکنگ کمیٹی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہاں موجود ایک ایک چہرہ ن لیگ کا ایک ستون ہے، خوشی محسوس ہورہی ہے آج پوری لیڈرشپ کمیٹی اجلاس میں موجودہے، ہر صوبے کی قیادت آج یہاں موجود ہے، ہمارے رہنماؤں کو جھوٹے مقدمات میں گرفتار کیا جاتا تھا، ان لوگوں کو کہنا چاہتا ہوں آپ لوگ بہت کھرے لوگ ہیں، ایسے رہنما سونے میں تولنے کے برابر ہیں، پارٹی کے کارکنوں اور لیڈرشپ نے بہت مشکل وقت گزاراہے، اللہ نے مہربانی کی ہم سب کوسرخروکیا، جھوٹے مقدمات کا خاتمہ بھی ہوا۔

نوازشریف نے کہا کہ پوچھنا چاہتا ہوں 1990 میں ہماری حکومت کیوں گرائی گئی، اگر وہ تسلسل قائم رہتا تو آج ہم دنیا میں خاص مقام پا جاتے، جس وزیراعظم نے ایٹمی طاقت بنایا اسے سزائے موت دینے کی کوشش کی گئی، مجھے ایٹمی دھماکے سے روکنے کیلئے  5 ارب ڈالر کی آفرکی گئی۔

انہوں نے کہا کہ 2013 میں ایک بار پھر ہماری حکومت آئی، 35 پنکچرکی رٹ لگانے والے کے پاس خود گیا تھا، ان سے بھی کہا کہ الیکشن ہوچکے آئیں ملکر کام کریں، ملکی ترقی کے لیے ایک ایجنڈا بناکر کام کیا جس کی مثال نہیں ملی۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ جاننا چاہتا ہوں کہ ہماری حکومت کا تختہ کیوں الٹا گیا تھا، ڈی چوک پر میرے خلاف دھرنے دیے جارہےتھے، چین کے صدر اس وقت دورہ کرنے والے تھے، ان دنوں یہاں دھرنے چل رہے تھے، چین کے صدر نے کہا تھا کہ سی پیک آپ کے لیے ایک تحفہ ہے، چین کے صدر پاکستان کے ساتھ تعلقات مزید مضبوط کرنے آئے تھے۔

Advertisement

مسلم لیگ کے قائد نے کہا کہ 28مئی کو جنرل کونسل اجلاس میں تفصیل سے بات کروں گا، ایک عرصے تک ڈالر کو 104پر رکھاگیا، اگراحتساب کا طریقہ کار درست ہوتا تو آج ہم کہیں اورہوتے، ایسے شخص کو لایا گیا جس نے ملک میں تباہی مچادی، سیاستدانوں کے علاوہ بھی لوگوں کا احتساب ہونا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ مشکل حالات کے بعد پھر دوبارہ اسمبلیوں میں آکر بیٹھے، 150سے زائد مقدمات کو مریم نواز نے بھی بھگتا ہے، مجھے کہا گیا میرے اثاثے میری آمدن سے نہیں ملتے، مجھے تنخواہ نہ لینے پر نکالاگیا تھا، مجھے یہ پوچھنے کا حق ہے کہ مجھے کیوں نکالا گیا تھا، مجھے پارٹی کی صدارت سے بھی ہٹادیا گیا تھا۔

نوازشریف نے کہا کہ کسی ملک میں ججز وزیراعظم یاصدرکو نہیں نکال سکتے لیکن 3 لوگ بیٹھ کر25 کروڑعوام کے نمائندہ وزیراعظم کوتاحیات نااہل کررہے تھے، مجھے بتائیں اس کا جواب کون دے گا، نکالنے کے بعد رکے نہیں پارٹی صدارت سے بھی نکالنے کا کہا، پارٹی صدارت سے نکالنے کا فیصلہ بھی انہی کاتھا۔

سابق وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ جسٹس مظاہرنقوی نے جائیدادیں بنائیں، جسٹس مظاہرنقوی پرمقدمہ چلناچاہئے، چیف جسٹس بننے والاجج وقت سے پہلےاستعفیٰ دے کرکیوں بھاگ گیا، یہ معاملہ کسی بھی کنارے لگنا چاہئے، احتساب ہوناچاہئے، ثاقب نثارکی ایک آڈیومیرےپاس موجودہے، ثاقب نثارنے کہا کہ بانی پی ٹی آئی کولانا ہے، ثاقب نثار نے کہا نوازشریف اورمریم نوازکوجیل میں رکھنا ہے، کیاثاقب نثارکی آڈیولیک کااحتساب نہیں ہوناچاہئ۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں میگا پراجیکٹس شروع کیے گئے، آج موٹرویز کی افادیت کو ہر شخص مانتا ہے، اکانومی ہماری گروتھ کر رہی تھی، ہم  نے اللہ کے فضل سے پاکستان کو ایٹمی طاقت بنایا۔

Advertisement
Advertisement

Catch all the Business News, Breaking News Event and Latest News Updates on The BOL News


Download The BOL News App to get the Daily News Update & Live News


Advertisement
آرٹیکل کا اختتام
مزید پڑھیں
قومی بجٹ برائے 25-2024 کی منظوری کب ہو گئی؟
حجاج سے متعلق سوشل میڈیا کی خبریں بے بنیاد ہیں، وزارت مذہبی امور
پنجاب میں عید صفائی مہم کے عملے کی موجیں، ایک ماہ کی تنخواہ بطور انعام دینے کا اعلان
مریم نواز شریف کی ڈرگ فری پنجاب مہم، پنجاب پولیس کا کریک ڈاؤن جاری
پاکستان میں پولیو وائرس کا پھیلاؤ مسلسل جاری
حکومت کے پیپلزپارٹی کے ساتھ بیک ڈور رابطے کام کرگئے
Advertisement
توجہ کا مرکز میں پاکستان سے مقبول انٹرٹینمنٹ
Advertisement

اگلی خبر