Advertisement
Advertisement
Advertisement
Advertisement

موجودہ آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کی تاریخ کا آخری پروگرام ہوگا، وزیراعظم شہباز شریف

Now Reading:

موجودہ آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کی تاریخ کا آخری پروگرام ہوگا، وزیراعظم شہباز شریف

بجٹ میں تنخواہ دار طبقے، پینشنرز اور مزدوروں کو ریلیف دیا، وزیرِاعظم

وزیراعظم شہبازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان ترقی وخوشحالی کے راستے پر گامزن ہورہا ہے، ہم نے پاکستان کو ڈیفالٹ ہونے سے بچا لیا۔ موجودہ آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کی تاریخ کا آخری پروگرام ہوگا.

وزیراعظم محمد شہبازشریف نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پوری قوم اور امت مسلمہ کو حج اورعید کی مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ اللہ ہماری عبادات اور قربانیوں کو قبول فرمائے۔

وزیراعظم نے کہا کہ فلسطینوں پرظلم وستم ڈھایا جا رہا ہے، غزہ میں شہید ہونے والوں میں ہزاروں شیرخوار بچے تھے، غزہ میں اس قسم کے ظلم آنکھوں نے تاریخ میں پہلے کبھی نہیں دیکھے، مقبوضہ کشمیرمیں بھی ظلم ڈھائے جا رہے جس کی مثال نہیں ملتی۔ کشمیر کی وادی کشمیریوں کے خون سے سرخ ہوچکی ہے۔

وزیراعظم شہبازشریف نے کہا کہ اولین ترجیح شاہانہ اخراجات کا خاتمہ ہے، پی ڈبلیوڈی کی وزارت کرپشن میں سرفہرست ہے، قوم کے اوپربوجھ بننے والے تمام اداروں، وزارتوں کاخاتمہ ناگزیرہے، ماضی میں جھانک کر رونے دھونے سے کوئی فائدہ نہیں، ماضی کے جھروکوں سے سبق سیکھنا چاہئے۔

انھوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ ماضی سے سبق سیکھ کرہم پاکستان کوکھایاہوامقام واپس دلوائیں گے، مہنگائی سے پریشان عوام کو کچھ ریلیف ملے گا، موجودہ اشاریوں سےآئندہ بھی مزید ریلیف ملنے کی قوی توقع ہے، یہ سفرمشکل اورطویل ہے، اکابرین سے قربانی مانگتا ہے، قرضوں پرانٹرسٹ ریٹ اب 20 فیصد پرآ گیا ہے، حکومت کے100 دن مکمل ہونے پرپیٹرول کی قیمت میں کمی آئی۔

Advertisement

وزیراعظم نے کہا کہ پچھلے 4 سال میں ملک میں مہنگائی کا طوفان آیا، عام آدمی، بیوہ، یتیموں کوبنیادی ضروریات کے لیے تکلیف پہنچی، ملک میں مہنگائی 38 فیصد سے 12 فیصد پرآگئی ہے، ملک معاشی مشکلات سےآہستہ آہستہ ترقی کی جانب گامزن ہورہا ہے، ملک کوڈیفالٹ ہونے سے بچایا اس کا سہرانوازشریف، اتحادیوں کوجاتاہے۔

وزیراعظم شہبازشریف کا کہنا ہےکہ پاکستان ترقی وخوشحالی کے راستے پرگامزن ہورہا ہے، 2022 میں اقتدار سنبھالا اور پاکستان کو ڈیفالٹ ہونے سے بچایا، ڈیفالٹ سے بچانے کے لیے نوازشریف اور آصف زرداری کی رہنمائی میں کام کیا۔ ترقی کے دشمن دہشتگرد، ڈکیت، بجلی گیس چور، منافع خورذخیرہ اندوزہیں، حکومت اخراجات کم کریگی، سادگی اپنائیں گے۔

انھوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ صنعتیں نہیں لگائیں گے، کاروبار نہیں کرینگے، کاروبارکےلیے پرائیویٹ سیکٹر کو راغب کریں گے، فیصلہ کیا ہے آئی ٹی کی برآمدات کے نئے ریکارڈقائم کریں گے، تعلیم کے میدان میں ایمرجنسی کا نفاذ کیا ہے، اگلے 5 سال کے ایجنڈے کا آغاز کرچکےہیں، اربوں کے خسارے کاباعث بننے والےاداروں کو بیچ کر وصولی کرینگے۔

وزیراعظم نے کہا کہ صنعت اورایکسپورٹ کوبڑھانے کے لیے بجلی کی قیمت کم کردی، ملک بھرکی صنعتوں کےلیے بجلی ساڑھے 10 روپے فی یونٹ کم کردی گئی، سرمایہ کاری آئیگی توملک آہستہ آہستہ قرضوں سے نجات حاصل کرلےگا، ایسے ممالک بھی جنہوں نے صرف ایک بارآئی ایم ایف کے سامنے ہاتھ پھیلایا۔ بجٹ کےاعلان کے بعد اسٹاک ایکسچینج بلندترین سطح پرپہنچ گئی۔

وزیراعظم شہبازشریف نے کہا کہ رواں سال 30 فیصد زائد ریونیوحاصل کیا، موجودہ آئی ایم ایف پروگرام ملکی تاریخ کا آخری پروگرام ہوگا، بیرونی سرمایہ کاری سے پہلے اندرونی سرمایہ کاری پرتوجہ دینا ہوگی، ایف بی آرکی ڈیجیٹلائزیشن عالمی فرم کریگی، ایف بی آرمیں نالائق لوگوں کو ایک طرف کردیا، حکومت ایس آئی ایف سی کے پلیٹ فارم سے اربوں روپے کی سرمایہ کاری لائی۔

انھوں نے کہا کہ آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے مختلف ملکوں کے دورے کیے، آرمی چیف جنرل عاصم منیرنےسرمایہ کاروں کو راغب کیا، اولین ترجیح شاہانہ اخراجات کا خاتمہ ہے، پی ڈبلیوڈی کی وزارت کرپشن میں سرفہرست ہے، قوم کے اوپربوجھ بننے والےتمام اداروں، وزارتوں کاخاتمہ ناگزیرہے، ان اداروں کے خاتمےکے لیے کمیٹی بنادی گئی ہے، ان اداروں کے خاتمے سے اربوں روپوں کی بچت ہوگی۔ اگلے ڈیڑھ ماہ میں اس حوالے سے بہت سخت فیصلے کروں گا۔

Advertisement

وزیراعظم نے کہا کہ ملک کوڈیفالٹ ہونے سے بچایا اس کا سہرانوازشریف، اتحادیوں کوجاتاہے،ترقی کے دشمن کرپشن کرنےوالے ادارےہیں، آپ کادشمن وہ ہے جو شہدا کی قربانیوں کی توہین کرتا ہے، ہروہ شخص ٹیکس چورہے جو پاکستا ن سے کماتا ہے لیکن ٹیکس ادا نہیں کرتا، جدوجہد کا آغازحکومت اور اشرافیہ سے کیا جارہا ہے۔

Advertisement
Advertisement
مزید پڑھیں

Catch all the Business News, Breaking News Event and Latest News Updates on The BOL News


Download The BOL News App to get the Daily News Update & Live News


Advertisement
آرٹیکل کا اختتام
مزید پڑھیں
جب تک بجلی سستی نہیں ہوگی ڈیمانڈ نہیں بڑھے گی، چیئرمین اپٹما
آئی پی پیز کا دھندہ مزید نہیں چلے گا، عوام ظالموں سے اپنا حق چھین کر لیں گے، حافظ نعیم
آئی بی اے ٹیسٹ کے امیدواروں کا پریس کلب پر احتجاج
وفاقی کابینہ کا اجلاس کل طلب؛ 6 نکاتی ایجنڈے پر غور ہوگا
سابق وزیر گوہر اعجاز نے بجلی معاہدوں کو عوام دشمن قرار دے دیا
سوشل میڈیا پر نفرت پھیلانے والے عناصر کو ڈیجیٹل دہشتگرد قرار دینے کا فیصلہ
Advertisement
توجہ کا مرکز میں پاکستان سے مقبول انٹرٹینمنٹ
Advertisement

اگلی خبر