تمباکو کے استعمال میں کمی لانے کے لیے سادہ پیکیجنگ کے نفاذ کا مطالبہ


عروبہ خانویب ایڈیٹر

15th July, 2020

ملک بھر میں تمباکو کے استعمال میں کمی لانے کے لیے سادہ پیکیجنگ کے نفاذ کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ادارہ برائے تحفظ حقوق اطفال اسپارک نے بدھ  کے روز نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں  تمباکو کی مصنوعات کی  سادہ پیکیجنگ کے موضوع پر پریس کانفرنس کا انعقاد کیا۔

تمباکو  مصنوعات کی  برانڈنگ  تمباکو کی بڑی صنعت کی  فریب کاریوں  میں سے ایک ہے۔

 ہر سال پاکستان میں تمباکو کمپنیاں کم ٹیکس ادا کرکے ،  پیداوار کو کم ظاہر کر کے ، غیر قانونی تجارت کی شرح  فیصد کو بڑھا چڑھا کر بیان کر کے ، اور تشہیر اور اسپانسرشپ   کے قوانین کی خلاف ورزی کرکے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچاتی ہیں۔

 تمباکو کی کمپنیاں نئے گاہکوں خصوصا بچوں اور خواتین کو راغب کرنے کے لئے پرکشش رنگوں اور ڈیزائنوں اور دلکش الفاظ  کا استعمال کرتی ہیں۔

 تمباکو کمپنیاں نوجوانوں کو نشانہ بنانے کے لئے پرائمری اور سیکنڈری اسکولوں کے آس پاس  پر اپنی مصنوعات  کو پرکشش انداز میں تشیر  دے رہی ہیں جو کہ قانون کی خلاف ورزی ہے۔