پاکستانی بندرگاہوں کو ریل اور روڈ کے ذریعے ازبکستان سے جوڑنے کا فیصلہ

زاہد فاروق ملک رپورٹر

11th Sep, 2020. 02:41 pm
پاکستانی بندرگاہ

ازبکستان کی پاکستانی بندرگاہوں کے ذریعے سمندری تجارت تک رسائی اور تجارتی راہداری پر اہم پیش رفت ہوئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق  وفاقی وزیر برائے سمندری امور   سید علی حیدر زیدی سے ازبک نائب وزیر اعظم برائے سرمایہ کاری اور خارجہ تجارت  مسٹر سرڈور عمورزاکوف  نے ملاقات کی۔

ملاقات میں تجارتی راہداری اور اربکستان کو دنیا سے مربوط کرنے کے لیے پاکستانی بندرگاہوں کے استعمال پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔

اس موقع پر  پاکستانی بندرگاہوں کو ریل اور روڈ کے ذریعے ازبکستان سے جوڑنے کا فیصلہ کیا گیا  اور  کراچی اور گوادر پر ٹرمینل پر خصوصی بحری بیڑے کی بھی تجویز زیرغور آئی۔

گذشتہ دو سالوں میں ازبکستان اور پاکستان کے مابین تجارت بڑھی ہے۔ اس سلسلے میں جوائنٹ ورکنگ گروپ بنانے کی تجویز بھی پیش کردی گئی۔

تجارتی راہداری ازبکستان کی تجارتی اشیاء سمندری راستے سے افریقہ، ایشیاء، یورپ اور جنوب مشرقی ایشیاء پہنچانے میں مدد دے گی۔

پاکستانی بندرگاہیں وسطی ایشیائی تجارت کے لیے سب سے مختصر اور کم لاگت کا تجارتی راستہ ہیں۔

Square Adsence 300X250