پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف ایک طویل جنگ لڑی ہے، وزیر خارجہ


عروبہ خانویب ایڈیٹر

26th November, 2020
FM holds press conference in Niger on issues
Square ad 300 x 250

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ دہشت گردی کا تعلق ہے دنیا جانتی ہے کہ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف ایک طویل جنگ لڑی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے میامے نائجر میں واقع پاکستانی سفارت خانے میں صحافیوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا ہے کہ نائجر کے ساتھ ہمارے بہت اچھے سفارتی تعلقات ہیں یہ میرا نائجر کا پہلا دورہ ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ اس کانفرنس کے ذریعے ہمیں ان چیلنجز پر گفتگو کرنے کا موقع ملے گا جن کا سامنا اس وقت مسلم امہ کر رہی ہے اور او آئی سی ممبر ممالک کے وزرائے خارجہ اپنا اپنا نکتہ نظر پیش کریں گے جس سے ہمیں مشترکہ لائحہ عمل مرتب کرنے میں مدد ملے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ نئے چیلنجز میں اسلاموفوبیا کا بڑھتا ہوا رحجان اور کرونا عالمی وبائی چیلنج ہے، اسلاموفوبیا کے حوالے سے ہم اس او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کے اجلاس میں ایک جامع قرارداد پیش کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ کورونا عالمی وبائی صورتحال نے پوری دنیا کی معیشت کو بری طرح متاثر کیا ہے،وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے کرونا وبا کے معاشی مضمرات سے نمٹنے کیلئے ترقی پذیر اور کمزور معیشتوں کو قرضوں میں سہولت کی فراہمی کی تجویز دی ہے جسے عالمی سطح پر سراہا جا رہا ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ دہشتگردی کے خلاف موثر جنگ کیلئے آپ کو الحاق اور شراکت داری کی ضرورت ہے جس طرح پاکستان افغانستان میں قیام امن کیلئے مشترکہ کاوشیں بروئے کار لا رہا ہے ہم نے مل کر فیصلہ کیا ہے کہ ایک دوسرے کے خلاف دہشتگرد عناصر کو اپنی سرزمین استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

انہوں نے بتایا ہے کہہم نے پاکستان میں دہشت گرد کارروائیوں کی بھارتی سرپرستی کے ناقابل تردید ثبوت دنیا کے سامنے ایک ڈوزئیر کی شکل میں رکھے ہیں اور عالمی برادری کی توجہ اس صورت حال کی جانب مبذول کروائی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان سمجھتا ہے کہ افریقہ 1.3 ارب آبادی کا حامل ایک اہم براعظم ہے ہم افریقی ممالک کے ساتھ دو طرفہ تجارت اور سرمایہ کاری کے فروغ کیلئے “انگیج افریقہ پالیسی”پر عمل پیرا ہے۔

انہوں نے مزید کہا ہے کہ ہم نائجر میں انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ میں عملی طور پر حصہ لینا چاہتے ہیں – ہم نائجر میں ایکسپورٹ پروموشن زون کے قیام کا ارادہ رکھتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ نایجر کے ساتھ اقتصادی تعاون کو زیادہ سے زیادہ بڑھایا جائے۔