Advertisement
Advertisement
Advertisement
Advertisement

فرنچائز کرکٹ پر آئی پی ایل کی اجارہ داری خطرناک ہے، ایڈم گلکرسٹ

Now Reading:

فرنچائز کرکٹ پر آئی پی ایل کی اجارہ داری خطرناک ہے، ایڈم گلکرسٹ

آسٹریلیا کے سابق وکٹ کیپر بیٹسمین ایڈم گلکرسٹ نے کہا ہے کہ انڈین پریمئیر لیگ کی فرنچائر کرکٹ پر اجارہ داری خطرناک ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایڈم گلکرسٹ نے گزشتہ روز انڈین پریمیئر لیگ کے عالمی سطح پر پھیلتے ہوئے اثرات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کیش سے بھرپور لیگ کی ٹی ٹوئنٹی فرنچائز کرکٹ پر اجارہ داری کی کوششیں تھوڑا سا خطرناک ہوتی جا رہی ہیں۔

گلکرسٹ کے تبصرے آسٹریلوی میڈیا میں ان رپورٹس کے بعد سامنے آئے ہیں جن میں کہا گیا ہے کہ بلے باز ڈیوڈ وارنر اس سیزن میں آسٹریلیا کی بگ بیش لیگ کو چھوڑ کر متحدہ عرب امارات میں آئی پی ایل کے پیسوں سے ہونے والی نئی لیگ میں شرکت کریں گے۔

یاد رہے ڈیوڈ وارنر آئی پی ایل کی جانب سے دہلی کیپٹلز کے لیے کھیلتے ہیں، جس کی ملکیت بھارت کے جی ایم آر گروپ کے پاس ہے، جو اماراتی لیگ میں ایک ٹیم کا مالک ہے۔

اماراتی لیگ کا شیڈول آسٹریلوی بگ بیش لیگ کے ساتھ متصادم ہے ، جو دسمبر سے فروری 2023 کے اوائل تک چلتا ہے۔

Advertisement

واضح رہے کہ آئی پی ایل ٹیم کے مالکان نے جنوبی افریقہ کی نئی ڈومیسٹک ٹی 20 لیگ کی تمام چھ فرنچائزز بھی خرید لی ہیں۔

جبکہ کیریبین پریمئیر لیگ میں بھی تین آئی پی فرنچائز مالکان کی ٹیمیں ہیں۔

گلکرسٹ نے آسٹریلیا کے ایک ریڈیو کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ میرے خیال میں یہ کرکٹ آسٹریلیا کے لیے تقریباً تجارتی خودکشی ہو گی کہ وہ اپنے بہترین کھلاڑیوں کو اپنے ہی مقابلے کے خلاف آگے بڑھنے دیں۔

ایڈم گلکرسٹ نے ڈیوڈ وارنر کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ وارنر کو بی بی ایل میں کھیلنے کے لیے مجبور نہیں کر سکتے، کیونکہ یہ آئی پی ایل کے ریڈار پر ہے جسے عالمی کرکٹ پر غلبہ کی خواہش بھی ہے۔

گلکرسٹ نے کہا کہ آئی پی ایل کی عالمی کرکٹ کے کھلاڑیوں پر گرفت خطرناک حد تک بڑھ رہی ہے ، آئی پی ایل کا مقصد کھلاڑیوں کی ملکیت، اور اس کی صلاحیتوں کو اپنے قبضے میں کرنا ہے۔

گلکرسٹ کا کہنا تھا کہ اگر آئی پی ایل مکمل طور پر اپنے مذموم مقصد میں کامیاب ہو جاتا ہے تو پھر کھلاڑی کہاں کھیل سکتا ہے اور کہاں نہیں کھیل سکتا اس کا فیصلہ آئی پی ایل کرے گا۔

Advertisement

گلکرسٹ نے کہا کہ تجربہ کار وارنر کی آسٹریلوی کرکٹ سے وابستگی پر سوالیہ نشان نہیں لگایا جا سکتا لیکن انہوں نے مزید کہا کہ نوجوان کھلاڑی ان کے نقش قدم پر چل سکتے ہیں۔

گلکرسٹ کے مطابق اگر ڈیوڈ وارنر کہتا ہے کہ میں آسٹریلین کرکٹ کے بجائے مختلف لیگز میں بھارتی فرنچائز ٹیم کے لیے کھیلوں گا تو پھر آپ وارنر سے سوال نہیں کر سکتے، کیونکہ آئی پی ایل کو یہ موقع آپ نے فراہم کیا ہے۔

Advertisement
Advertisement
مزید پڑھیں

Catch all the Business News, Breaking News Event and Latest News Updates on The BOL News


Download The BOL News App to get the Daily News Update & Live News


Advertisement
آرٹیکل کا اختتام
مزید پڑھیں
ٹیسٹ اور ٹی ٹوئنٹی پلیئرر رینکنگ جاری، بابر اور شاہین شامل
پاکستان کا دورہ نیوزی لینڈ کے لیے شیڈول جاری
دفاعی چیمپئن حمزہ خان ورلڈ جونیئر اسکواش چیمپئن شپ سے آؤٹ
محسن نقوی کا ٹیم میں گروپنگ کرنے والے کھلاڑیوں کو واضح پیغام
بھارتی حکومت پاکستان میں کھیلنے کی اجازت نہیں دیتی تو بی سی سی آئی لکھ کر دے، پی سی بی
پی سی بی چیمپئنز ٹرافی 2025 کے تمام میچز پاکستان میں ہی کرانے پر بضد
Advertisement
توجہ کا مرکز میں پاکستان سے مقبول انٹرٹینمنٹ
Advertisement

اگلی خبر