لندن میں مسیحی برادری اس دفعہ کرسمس کا تہوار نہ منا سکی


تنویر علی

25th December, 2020
Square ad 300 x 250

برطانیہ کے دوسرے شہروں کی طرح لندن میں بھی مسیحی برادری اس دفعہ کرسمس کا تہوار نہ منا سکی۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق لندن کو ٹیئر فور میں رکھا گیا ہے جس کی وجہ سے لوگوں کے ایک دوسرے سے ملنے اور اجتماعات پر پابندی ہے اس سے پہلے حکومت نے 23 دسمبر سے 27 دسمبر تک لوگوں کو کرسمس کی خوشیاں منانے کے لیے کچھ سہولت دی تھی تاہم کورونا وائرس کی نئی شکل کی بڑھتی ہوئی شدت کی وجہ سے برطانیہ کے بہت سے علاقوں میں ٹیئر فور کا نفاذ کر دیا گیا۔

ہر سال مسیحی برادری اپنے گرجا گھروں کو برقی قمقموں لائٹوں سے سجاتی تھی 24 دسمبر کی رات کو کیرل سروسز ہوتی اور مسیحی گیت گائے جاتے جبکہ 25 دسمبر کو دن کرسمس کی تقریبات ہوتی جس میں پاسٹر اوربشپ لوگوں کو حضرت عیسی علیہ السلام کی زندگی کے متعلق لیکچر دیتے۔

ایسٹ لندن میں کرسمس کی سب سے بڑی تقریب ہر سال سینٹ اینڈریو چرچ الفرڈ  میں منعقد ہوتی تھی لیکن اس سال کوئی تقریب منعقد نہیں ہوئی تاہم کچھ گرجا گھروں کی جانب سے  آن لائن تقریبات کا انعقاد کیا گیا ہے۔