ترکی اور روس کا شمالی شام میں مشترکہ فوجی گشت کا آغاز


سید قاسم رضاویب ایڈیٹر

01st November, 2019
Turkey - Russia
Square ad 300 x 250

ترکی  اور روس نے شمالی شام میں مشترکہ فوجی گشت کا آغاز کردیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق روس اور ترکی کے مشترکہ فوجی گشت کا آغازماسکو اور  انقرہ کے مابین گذشتہ ماہ معاہدے کےبعدکیاگیاہے۔

یاد رہے کہ روسی اور ترک صدر کے درمیان22اکتوبر کو معاہدہ طے پایاتھا۔

معاہدے تحت کرد دہشت گردوں کو 150 گھنٹوں میں شمالی شام میں ترکی کی سرحد سے 30 کلومیٹر جنوب میں پیچھےدکھیلنےپر اتفاق ہواتھا۔

واضح رہے کہ ترکی 20 لاکھ شامی مہاجرین کو دوبارہ آباد کرنے کے لئے 30 کلومیٹر کےعلاقے کو خالی کرانا چاہتا ہے۔

انقرہ حکومت شامی کردوں کو ترک کردوں کا اتحادی اور دہشت گرد قرار دیتی ہے۔

ترک صدر ایردوآن نے ’آپریشن امن بہار‘ کا اعلان کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ شامی کردوں کی تنظیم ’سیریئن ڈیموکریٹک فورسز‘ یا ‘ایس ڈی ایف‘ کے خلاف کارروائی اس لیے ناگزیر ہے کیوں کہ وہ ترکی کے خلاف حملے کرنے والے کرد دہشت گردوں کے ساتھی ہیں۔

ترکی نے شمالی شام میں کردوں کے زیر اثر علاقوں میں شدید فضائی حملوں کے بعد زمینی فوجی آپریشن بھی کیاتھا۔