Adpushup 300X100 Mobile
Adsence 728X90
Post Page Banner Ads
DoubleClick 970X250

ووٹ کی طاقت بھٹو نے عوام کو دی، راجہ پرویز اشرف

اریبہ تنویر

27th Nov, 2021. 11:58 pm
راجہ پرویز اشرف

رکن قومی اسمبلی نے کہا ہے کہ ووٹ کی طاقت بھٹو نے عوام کو دی۔

راجہ پرویز اشرف نے یونین کونسل 230 میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوام سے ووٹ لینے والے کبھی ان کا حال پوچھنے نہیں آئے۔

ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی نے خواتین کو ہمیشہ عزت دی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم سارے پنجاب میں پیپلز پارٹی کی حکومت بنائیں گے، اسلم گل کو ووٹ دیں، وہ حلقے میں نہ آیا تو استعفیٰ دیدے گا۔

راجہ پرویز نے کہا کہ ہم نے پہلے بھی نوکریاں دی ہیں اور اب واپس حکومت میں آنے کے بعد بھی دیں گے۔

کارنر میٹنگ میں حسن مرتضی، ثمینہ خالد گھرکی، شاہدہ رحمانی، شہلا رضا، ثمینہ پگانوالہ، صغیرہ اسلام، ذکی چودھری، جاوید مغل، حاجی فرخ زمان، افنان بٹ، نعیم دستگیر، فائزہ ملک، بشری ملک، سونیا خان، رانا جمیل منج، امجد جٹ، افنان بٹ، ملک افضل ندیم، شمشیر مرزا، نرگس خان اور زاہد ذوالفقار نے شرکت کی۔

Square Adsence 300X250

تازہ ترین نیوز پڑہنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کریں بول نیوزایپ

ایسے ڈرامے نشر کرنا روک دیں جن میں خواتین کو دکھایا گیا ہو : طلبان کی جانب سے ہدایت جاری

Mehdi Qazi

22nd Nov, 2021. 06:27 pm

افغانستان میں طالبان حکومت کے زیر انتظام “الامر بالمعروف والنہی عن المنکر” کی وزارت نے ملک میں ٹی وی چینلوں کو ہدایت جاری کی ہے کہ وہ ایسے ڈرامے نشر کرنا روک دیں جن میں خواتین کو دکھایا گیا ہو۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق اتوار 21 نومبر کو میڈیا کے لیے جاری ہونی والی ہدایت میں زور دیا گیا ہے کہ ” ٹی وی چینلوں کو چاہیئے کہ وہ ایسے رومانوی ڈرامے نشر کرنے سے گریز کریں جن میں خواتین بھی کردار ادا کر رہی ہوں”۔

وزارت نے مطالبہ کیا ہے کہ خواتین صحافی ٹی وی اسکرین پر نمودار ہوں تو انہیں ’اسلامی حجاب‘ میں ہونا چاہیئے۔ یہ واضح نہیں کیا گیا کہ مذکورہ حجاب سے مراد صرف سر کو ڈھانپنا ہے یا ایسا حجاب پہننا ہے جو اس سے زیادہ حصہ ڈھانپے۔

علاوہ ازیں افغان ٹی وی چینلوں سے کہا گیا ہے کہ وہ ایسے پروگرام پیش کرنے سے اجتناب کریں  جو افغان اسلامی قدار سے متصادم ہوں۔ اسی طرح وہ پروگرام بھی جو مذہب کو ضرر پہنچاتے ہوں یا ان میں نبی کو ان کے ساتھیوں سمیت دکھایا گیا ہو۔

رواں سال اگست کے وسط میں اقتدار پر کنٹرول حاصل کرنے کے بعد یہ دوسرا موقع ہے جب وزارت نے افغان ٹیلی وژن چینلوں کے لیے ضابطہ اخلاق سے متعلق ہدایات جاری کی ہیں۔

واضح رہے کہ 1996ء سے 2001ء کے درمیان طالبان تحریک نے اپنے پہلے دور حکومت میں ٹی وی اور سنیما کی تمام صورتوں پر پابندی عائد کر دی تھی۔

بعد ازاں 2001ء میں طالبان حکومت کے سقوط سے اب تک 20 برسوں میں افغانستان میں میڈیا سیکٹر نے کافی ترقی کر لی۔ اس دوران میں درجنوں نجی ریڈیو اور ٹی وی چینل قائم ہوئے۔

Square Adsence 300X250

تازہ ترین نیوز پڑہنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کریں بول نیوزایپ