دنیا کی پہلی بس جو پٹری پر بھی دوڑ سکتی ہے

Web Desk

07th Dec, 2021. 01:47 pm

یہ بس ہے یا چھوٹی ریل گاڑی، آپ جو بھی سمجھیں لیکن اس ماہ کے آخر میں یہ بس ریل کی پٹریوں پر دوڑ سکے گی جسے پٹری پر چلنے والی پہلی بس کہا گیا۔

اسے جاپانی ماہرین نے بنایا ہے اور ڈیول موڈ وھیکل (ڈی ایم وی) کا نام دیا ہے۔ 25 دسمبر سے اسے باقاعدہ طور پر چلایا جائے گا اور حیرت انگیز طور پر یہ روڈ اور پٹریوں دونوں پر چل سکتی ہے اور صرف چند سیکنڈوں میں روڈ سے سڑک پر آنے کے لیے تیارہوجاتی ہے۔

لیکن واضح رہے کہ اسے بنانے میں 20 برس لگے ہیں یعنی 2002 میں اس پر کام شروع کیا گیا تھا۔ پہلے مرحلے میں تین بسوں کو 123 کلومیٹر پٹری پر چلایا جائے گا۔ لیکن جاپانی کمپنی نے مزید تفصیلی تصاویر جاری نہیں کی ہے۔

ایک ڈی ایم وی میں 23 مسافر بیٹھ سکتے ہیں۔ سڑک پر یہ ربڑ کے ٹائروں پر دوڑے گی تو پٹری پر اس کے نیچے سے ریل گاڑی کی طرح دھاتی پہیئے برآمد ہوں گے۔ یہ عمل صرف ایک بٹن دبانے سے مکمل ہوجائے گا۔ ریلوے لائن پر اس کی زیادہ سے زیادہ رفتار 80 کلومیٹر فی گھنٹہ تک ہوگی۔

لیکن ان سب کے باوجود ڈی ایم وی ایک طرح کی سیاحتی گاڑی ہے جو اپنی دھیمی رفتار سے لوگوں کو مختلف مقامات کی سیر کراسکتی ہے۔ صرف 15 سیکنڈ میں یہ بس سے ریل بن جاتی ہے یعنی روڈ سے پٹری تک آنے کے لیے تیار ہوجاتی ہے۔ جاپان میں زلزلوں کے واقعات کے تناظر میں بھی اسے تیار کیا گیا۔ اگر روڈ خراب ہوجائیں تو زلزلے میں ریل کی پٹریوں سے اسے آگے بڑھایا جاسکتا۔

Square Adsence 300X250